16

فلیگ شپ ریفرنس : نیب نے نواز شریف کے خلاف بڑی چال چل دی

” >
اسلام آباد(ویب ڈیسک)قومی احتساب بیورو(نیب )نے فلیگ شپ ریفرنس میں نئی دستاویزات عدالتی ریکارڈپرلانے کی احتساب عدالت میں درخواست دائر کردی جس کی نوازشریف کے وکلا نے سخت مخالفت کی ۔تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت میں سابق وزیراعظم نوازشریف کیخلاف فلیگ شپ ریفرنس کی سماعت جاری ہے،نیب نے نئی دستاویزات عدالتی ریکارڈ لانے کیلئے درخواست دائر کردی ہے،


نیب پراسیکیوٹر نے کہا کہ ایم ایل ایزجے آئی ٹی نے لکھے تھے،ایم ایل ایزکا جواب لینے کاکام نیب کاتھا،سردار مظفر نے کہا کہ متعلقہ ممالک کوخطوط بھیج کرمجازاتھارٹی کی تبدیلی سے آگاہ کیاتھا،ہم مجازاتھارٹی تبدیل ہونے سے متعلق لکھے گئے خطوط ریکارڈپرلاناچاہتے ہیں،اس پر نوازشریف کے وکلاکی نیب درخواست کی مخالفت کی۔ جبکہ دوسری جانب فلیگ شپ ریفرنس میں حسن نوازکی جائیداد سے متعلق دستاویزات احتساب عدالت میں پیش کر دی گئیں۔تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت میں سابق وزیراعظم نوازشریف کےخلاف فلیگ شپ ریفرنس کی سماعت جاری ہے،نیب نے حسن نواز کی جائیداد سے متعلق دستاویزات عدالت میں پیش کردیں ،ایون فیلڈہاو¿س سے متعلق لینڈرجسٹری کاکورنگ لیٹر،رجسٹرآف ٹائٹل کی آفیشل کاپی بھی عدالت میں جمع کرائی گئی۔اس کے علاوہ برطانیہ کے لینڈ رجسٹری ڈیپارٹمنٹ کاتفتیشی افسرکوخط ،سٹین ہوپ ہاؤس میں گراؤنڈفلورپردفترکی رجسٹری،15 چیمبرسٹریٹ لندن میں فیٹلراینڈفرکن کی کاپی آف رجسٹری،ایج ویئرروڈپرفلیٹ نمبر 8اور 121سے 125تک کی رجسٹری بھی پیش کی گئی،نیب نے ایج ویئرروڈپرپارکنگ کی جگہ کی رجسٹری،کیڈاگون سکوائرلندن میں فلیٹ نمبر 4 کی رجسٹری بھی جمع کرادی۔ جبکہ پوزیشن لیڈر قومی اسمبلی شہبازشریف کی گرفتاری کیخلاف ایک اورانٹراکورٹ اپیل دائر کردی گئی۔درخواست گزار نے عدالت کے رو برو موقف اختیار کیا ہے کہ نیب نے جس قانون کے تحت شہبازشریف کوگرفتارکیاوہ ختم ہوچکا،استدعا ہے کہ عدالت شہبازشریف کی گرفتاری کالعدم قراردے۔واضح رہے کہ اپوزیشن لیڈر قومی اسمبلی شہبازشریف تقریباً ایک ماہ سے آشیانہ ہائوسنگ سکیم میں کرپشن کے الزام میں نیب کی حراست میں ہیں.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں