15

پی ٹی آئی بھی (ن) لیگ کے نقش قدم پر چل پڑی ۔۔۔۔ نیب کو کمزور بنانے کے لیے ایسی چال چل دی کہ جان کر آپ بھی دنگ رہ جائیں گے

” >
اسلام آباد (ویب ڈیسک )تحریک انصاف کی حکومت بھی سابق حکومت کے نقش قدم پر چلنے لگی ، اپنے کڑے احتساب اور قومی احتساب بیورو کو مضبوط بنانے کے دعویٰ کو یکسر نظر انداز کرتے ہوئے وزارت خزانہ نے نیب کے رکے ہوئے فنڈز دینے سے انکار کردیا،فنڈز کی عدم دستیابیط

مولانا سمیع الحق شہید اور ذوالفقار علی بھٹو و نواز شریف کے دو بھولے بسرے واقعات جو پڑھ کر آپ شریفوں اور زر والوں کی فنکاریوں اور طریقہ واردات سے واقف ہو جائیں گے
سے نیب ملازمین کی مشکلات بڑھنے لگیں۔روزنامہ دنیا کے مطابق قومی احتساب بیورو کو ریکوری اینڈ ریوارڈ اور ہارڈشپ الاﺅنس فنڈز کے لئے وزیر اعظم عمران خان نے چیئرمین نیب سے ملاقات میں نیب کو مکمل تعاون کی یقین دہانی کروائی تھی لیکن اب حکومت اس یقین دہانی کو پورا کرنے میں ہچکچاہٹ کا شکار ہے ،نیب کو اس وقت شدید مایوسی کا سامنا کرنا پڑا جب وزارت خزانہ نے ایک ارب دس کروڑ روپے کے نیب کے فنڈز کی منظوری کے لئے بھجوائی گئی سمری مسترد کردی۔ذرائع کا کہنا ہے کہ فنڈز روکے جانے کی وجوہات کئی حکومتی اعلیٰ شخصیات کے خلاف کرپشن اور بدعنوانی کی انکوائریز اور تحقیقات ہیں جو ابھی تک چل رہی ہیں اورحتمی مراحل میں ہیں،ماضی کی حکومت نے بھی نیب فنڈز میں کمی کے ساتھ اسے روکا تھا جس میں سابق وزیر خزانہ اسحاق ڈار سرفہرست ہیں،دوسری جانب فنڈز کی عدم دستیابی سے نیب میں کام کرنے والے ملازمین مشکلات کا شکار ہیں، چیئرمین نیب نے اپنی جیب سے دو ملازمین کی بچوں کی شادی کے لئے ایک لاکھ روپے ادا کئے ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں