12

امریکہ اور روس پھر آمنے سامنے۔۔۔۔ سخت پابندیاں عائد کیے جانے کی خبر آگئی

واشنگٹن (ویب ڈیسک) امریکہ نے 2 یوکرینی اور ایک روسی افسر کے علاوہ 9 دیگر روسی اداروں پر نئی پابندیوں کے نفاذ کا اعلان کیا ہے۔ امریکی محکمہ خزانہ کے مطابق ان نئی پابندیوں کا نفاذ روس کی جانب سے یوکرینی علاقے کریمیا پر قبضے اور اس قبضے سے فائدہ حاصل کرنے

کے اقدامات کے تناظر میں عمل میں آیا۔ امریکی محکمہ خارجہ کا کہنا ہے کہ کریمیا پر روسی قبضے کے خلاف اقدامات اٹھائے جاتے رہیں گے۔ واضح رہے کہ روس نے عسکری مداخلت کے ذریعے مارچ 2014 میں یوکرینی علاقے جزیرہ نما کریمیا پر قبضہ کر لیا تھا۔ بعد میں ایک متنازعہ ریفرنڈم کے ذریعے اس روس کا حصہ بنا دیا گیا تھا۔دوسری جانب روسی سفارت خانے کے بیان میں کہا گیا ہے کہ امریکہ نے بھی اس بارے میں روس کے سوالوں کے جواب دینے سے انکار کردیا ہے۔ امریکہ نے اعلان کیا ہے کہ وہ برطانیہ میں مقیم ایک سابق روسی جاسوس اور اس کی بیٹی کو قتل کرنے کے لیے کیمیائی ہتھیار کے غیر قانونی استعمال پر روس کے خلاف نئی اقتصادی پابندیاں عائد کرے گا۔ صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی حکومت نے نئی پابندیوں کے نفاذ کا اعلان بدھ کی شب کیا جو رواں ماہ ہی نافذ العمل ہوں گی۔ امریکی اعلان کے ردِ عمل میں واشنگٹن ڈی سی میں واقع روسی سفارت خانے نے اپنے ملک پر عائد کیے جانے والے الزامات کو بے سروپا قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ روسی حکام کو بارہا مطالبات کے باوجود اب تک ان الزامات کے بارے میں کوئی ثبوت نہیں دیا گیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں